Placeholder image

ای کامرس کلیرنس کے خود کار نظام کا اجراء

 پاکستان کے کاروباری اداروں سے صارفین کو ای کامرس برآمدات کے فروغ کے لئے پاکستان کسٹمز نے اسٹیٹ بینک آف پاکستان، وزارت کامرس اور ای کامرس آپریٹرز کے اشتراک سے ای کامرس کلیئرنس کے خود کار نظام کا اجراء کر دیا ہے۔ اس نئے سسٹم کی بدولت ای کامرس تجارت اور پاکستان سے ای کامرس کی برآمدات کو باقاعدہ دستاویزی شکل دینے میں مدد ملے گی۔ اس سسٹم کے ذریعے کمرشل بینک پاکستان کسٹمز کے وئی بوک سسٹم میں ای کامرس کے تاجروں کی رجسٹریشن کر سکتے ہیں۔ کاروباری اداروں سے صارفین کو ای کامرس برآمدات کے لئے اسٹیٹ بینک کے ریگولیٹری فریم ورک کے تحت برآمد کنندگان اپنی ای کامرس کنسائنمنٹس برآمد کر سکیں گے اور اس پر 5000 ڈالر فی کنسائنمنٹ تک کے ای فارم کی شرط عائد نہیں ہو گی۔ یہ شپمنٹس پاکستان کسٹمز میں رجسٹرڈ کوریئر کمپنیوں کے ذریعے بھجوائی جائیں گی جو برآمد کنندگان کے نمائندے کے حیثیت سے وئی بوک سسٹم میں گڈز ڈیکلریشن جمع کرائیں گے۔ ہر کنسائنمنٹ کی نشاندہی کے لئے ایک منفرد ایچ اے ڈبلیو بی نمبر مخصوص ہو گا۔ برآمدی شپمنٹس کی تفصیلات پاکستان سے اشیاء کی برآمد کے بعد سسٹم میں برآمد کنندگان کے ای کامرس پروفائل میں بینکوں کے لئے دستیاب ہوں گی۔ برآمد کنندہ کو شپمنٹ کی تاریخ سے 60 دن کے اندر برآمدی کارروائی کی تکمیل یقینی بنانا ہو گی۔ برآمدی رقم کی ادائیگی بیرون ملک سے کمرشل بینکوں کو بینکنگ چینل یا انٹرنیشنل پے منٹ سکیم/ گیٹ وے کے ذریعے غیرملکی کرنسی میں یا غیرمقیم افراد کے روپیہ اکاؤنٹ سے پاکستانی روپوں میں ہو گی۔ برآمدی کارروائی کی تکمیل اور دیگر ریگولیٹری شرائط کی بجاآوری کے لئے سسٹم میں اسٹیٹ بینک اور کمرشل بینکوں کے لئے مختلف ایم آئی ایس رپورٹیں فراہم کر دی گئی ہیں۔

ای کامرس کے برآمد کنندگان نے اس اقدام کا خیرمقدم کیا ہے جس کی بدولت چھوٹے اور درمیانے کاروباری اداروں کے لئے اپنی مصنوعات کی برآمد میں درپیش مشکلات دور ہو جائیں گی جو کاروبار کی آسانی کے انڈکس میں پاکستان کی ریٹنگ بہتر بنانے میں بھی اپنا موثر کردار ادا کرے گی۔ پاکستان کسٹمز نے اسٹیٹ بینک اور وزارت کامرس کے اشتراک سے اس سلسلے میں تربیتی سیشنز کا اہتمام بھی کیا ہے۔