Placeholder image

آئی اینڈ آئی انلینڈ ریونیو ڈائریکٹوریٹ پشاور نے بھاری مقدار میں غیرقانونی سگریٹ قبضے میں لے لئے

غیرقانونی سگریٹ کے خلاف کریک ڈاؤن کے تحت ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر بشیر اللہ خان کی ہدایات پر ڈائریکٹوریٹ آف انٹیلی جنس اینڈ انوسٹی گیشن، انلینڈ ریونیو، پشاور نے اپنی کارروائیوں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ اسی سلسلے میں  متانی بائی پاس کے نزدیک ٹرک کو روک کر تلاشی لی گئی تو اس سے غیر قانونی سگریٹ برانڈز کے 216 کارٹن برآمد ہوئے جو موٹر وے کے راستے راولپنڈی بھجوائے جا رہے تھے۔ ان میں کیپسٹن، گولڈ لیف اور مارون وغیرہ جیسے برانڈز بھی شامل تھے جن کی فروخت کے تمام حقوق ملٹی نیشنل کمپنیوں نے حاصل کر رکھے ہیں اور جو حکومت کو بھاری ٹیکس ادا کرتے ہیں۔ ایک اندازے کے مطابق اس غیرقانونی نقل وحرکت کے ذریعے اشیاء کی کل مالیت یعنی 2,268,000 روپے کے علاوہ 4,555,440 روپے کی ڈیوٹی اور ٹیکس چوری کی جا رہی تھی۔ جولائی 2020 سے اب تک یہ ڈائریکٹوریٹ کی مسلسل نویں کارروائی ہے جس کے نتیجے میں 5,700,000 غیرقانونی اور بغیر ڈیوٹی سگریٹ  کے علاوہ ان کی ٹرانسپورٹ کے لئے استعمال ہونے والی گاڑیاں قبضے میں لے کر ان کے خلاف قانونی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ ڈائریکٹر آئی اینڈ آئی، آئی آر پشاور کی جانب سے عندیہ دیا گیا ہے کہ ایف بی آر میں رجسٹریشن کے بغیر کام کرنے اور یوں قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والی کاروباری سرگرمیوں کے خلاف آپریشن مزید سخت کیا جا رہا ہے۔